آپ کے مسائل کا حل

سوال

سوتیلی  نانی  محرمات  ابدیہ میں سے ہیں ،  خدمت  کی  نیت سےان کے   ہاتھ پیردبانا  ، اسیطرح کندھے  اورسردبانا   جائز ہے ۔  البتہ  چونکہ حقیقی  نانی  نہیں ہیں بلکہ سوتیلی  نانی ہیں  اگر فتنے کا اندیشہ ہو  تو    لڑکے  یا  نواسے  ہاتھ  پیر نہ  دبائیں ۔ بوقت  ضرورت لڑکیاں  اور نواسیاں  یہ عمل  انجام  دے سکتی ہیں ۔

میری  نانانی جان کے انتقال   کے بعد   میرے  نانا  نے دوسری   شادی کی  ہے ،  جوکہ  رشتے میں   ہماری سوتیلی  نانا نی بنی  ہیں ، وہ  اکثر  ناناجان کے  بچوں  اور  نواسوں  سے پاؤں  اور کندھے دبواتی ہیں ، بچے  اور نواسے  ان کی خدمت کرتے ہیں ۔  شرعا اس طرح پاؤں   اور کندھے دبانے کا حکم ہے ؟

جواب

Leave a Comment