021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
اگرمدرس نے قبضہ شدہ جگہ میں مدرسہ بنالیاتواس کاحکم
..جائز و ناجائزامور کا بیانجائز و ناجائز کے متفرق مسائل

سوال

: مہتمم کی اجازت کے بغیر قائم کردہ اس ادارہ کاحکم اورحیثیت کیاہے؟

o

۴۔اگرمدرس(قبضہ شدہ زمین پر) مدرسہ بناتاہے تو اس ادارہ کاحکم یہ ہوگا کہ یہ ناجائزقبضہ شمارہوگا،اورقبضہ کی زمین ایک بالشت ہی کیوں نہ ہوناجائزوحرام ہے،اس پربہت سخت وعیدیں آئی ہیں،یہ نیامدرسہ صحیح وقف نہیں ہے،لہذااگرباہم اتفاق سے اس نئی عمارت کوبھی سابقہ ادارے میں شامل کرلیاگیاتواسے بیچ بھی سکتے ہیں،ممکن ہوتومسجد ومدرسہ کی عمارت کواسی حالت میں استعمال کیاجائے تاکہ لوگ غلط فہمی کاشکارنہ ہوں۔

حوالہ جات

" البيهقي فی شعب الایمان " 4 / 387: عن أبي حرة الرقاشي عن عمه أن رسول الله صلى الله عليه و سلم قال : لا يحل مال امرىء مسلم إلا بطيب نفس منه۔ "صحيح مسلم "ج 5 / 58: حدثنا أبو بكر بن أبى شيبة حدثنا يحيى بن زكرياء بن أبى زائدة عن هشام عن أبيه عن سعيد بن زيد قال سمعت النبى -صلى الله عليه وسلم- يقول « من أخذ شبرا من الأرض ظلما فإنه يطوقه يوم القيامة من سبع أرضين۔
..

n

مجیب

محمّد بن حضرت استاذ صاحب

مفتیان

آفتاب احمد صاحب / فیصل احمد صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔