021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
پولیو پلانے کا حکم
..جائز و ناجائزامور کا بیانعلاج کابیان

سوال

۔ پولیو پلانے کا کیا حکم ہے؟

o

پولیوکے قطروں سے متعلق ابھی کوئی یقینی بات سامنے نہیں آئی،جس کی بنیاد پر منع کیا جائے۔ پھر عرصہ دراز سے یہ قطرے پلائے جارہے ہیں، ابھی تک اس کے کوئی مضر اثرات یا توالد و تناسل میں کسی قسم کی رکاوٹ ظاہر نہیں ہوئی۔ اس لیے پولیو کے قطرے پلانا جائز ہے۔

حوالہ جات

المحيط البرهاني في الفقه النعماني (5 / 372): ونحن نستدل بما روينا، وبقوله عليه السلام: «تداووا عباد الله، فإن الله تعالى لم يخلق داءً إلا وقد خلق له دواءً إلا السام والهرم» ، ولكن ينبغي لمن يشتغل بالتداوي أن يرى الشفاء من الله لا من الدواء، ويعتقد أن الشافي هو الله دون الدواء.
..

n

مجیب

متخصص

مفتیان

محمد حسین خلیل خیل صاحب / سعید احمد حسن صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔