021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
فوم پرنمازپڑھنےکاحکم
69226نماز کا بیاننماز کےمتفرق مسائل

سوال

فوم پرنماز پڑھنےکاکیاحکم ہے؟کیاسرکےوزن سےجوفوم دب جائےوہ کافی ہےیااس کےبعدمزید سرسےدبانہ پڑےگا؟کیادبانےکااعتبارہرشخص کاالگ ہےکہ  ایک شخص ایک حدتک دباسکتاہےلیکن دوسرا اس سےذیادہ دباسکتاہےکیاپہلےشخص کی نماز ہوجائےگی؟

2۔سوال:فوم پرکوئی سخت چیز رکھ کرسجدہ کیاجائےتو کیاپھربھی دباناپڑےگا؟

o

فوم پرنمازصحیح ہونےمیں یہ تفصیل ہےکہ اگرکسی فوم  پرسجدہ کرتےہوئےپیشانی کومزید دبانے سے وہ مزیدنہ دبےتونماز درست ہوگی اورگرفوم پرسجدہ کرتےہوئےپیشانی کومزیددبانےوہ مزید  دبے تو اس پرنماز درست نہ ہوگی۔

2۔اگرفوم پرکوئی سخت چیزرکھ کرسجدہ کیاجائےاور ناک اور پیشانی ٹک جائےتونماز درست ہے،مزید دبانےکی ضرورت نہیں ہے۔

حوالہ جات

الدر المختار وحاشية ابن عابدين (رد المحتار) (1/ 501) ومن هنا يعلم الجواز على الطراحة القطن، فإن وجد الحجم جاز وإلا فلا بحر (قوله والناس عنه غافلون) أي عن اشتراط وجود الحجم في السجود على نحو الكور والطراحة، كما يغفلون عن اشتراط السجود على الجبهة في كور العمامة.
..

n

مجیب

متخصص

مفتیان

آفتاب احمد صاحب / سیّد عابد شاہ صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔