021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
بلا قعدہ دو کے بجائے چار رکعات پڑھنا(چار رکعات تراویح میں قعدہ اولی بھول گیا)
76504نماز کا بیانتراویح کابیان

سوال

تراویح میں قاری صاحب دو ركعتوں پربھول کر بغیر قعدہ كیے كھڑے ہو جاتے ہیں اور چار ركعتیں پوری كر كے سجدۂ سہو كر لیتے ہیں، تو آیا یہ دو ركعتیں شمار ہوں گی یا چار؟ اس كا شرعًا كیا حكم ہے؟

o

یہ دو رکعتیں شمار ہونگی،یعنی پہلی دو رکتیں نفل اور دوسری دو رکعتیں تراویح ہونگی ،لہذا پہلی دو رکعات کا اعادہ کرے اور اس میں پڑھا گیا قرآن مجید بھی دوبارہ پڑھے گا۔(احسن الفتاوی:ج۳،ص۵۱۱)

حوالہ جات

۔۔۔۔۔

نواب الدین

دار الافتاء جامعۃ الرشید کراچی

۲۰شعبان۱۴۴۳ھ

n

مجیب

نواب الدین صاحب

مفتیان

سیّد عابد شاہ صاحب / محمد حسین خلیل خیل صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔