021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
اپنے کوقادیانی لکھوانے والے شخص سے بائیکاٹ کا حکم
75542ایمان وعقائدایمان و عقائد کے متفرق مسائل

سوال

ایسا  شخص  جو   باہر  ملک  جانے کی لالچ میں اپنے  کو کاغذات  میں  قادیانی لکھوا چکا  ہے اس  سے عام  مسلمانوں کو تعلق رکھنا کیسا  ہے ؟ اس کی خوشی  اور  غمی  میں عام  مسلمانوں  کی  شرکت کے بارے  میں کیا حکم ہے ؟

o

تمام مسلمانوں کے  اسلامی غیرت اور حمیت کا تقاضایہ ہے کہ قادیانیوں سے میل جول نہ رکھیں ،ان کی شادی بیاہ اور دیگر خوشی اور غمی کی تقریبات  میں شرکت نہ کریں ،ان سے تجارتی لین دین بھی نہ کریں ۔ البتہ اگر  دعوت وتبلیغ کی غرض  سے  بقدر ضرورت  کوئی  میل جول رکھے تو اس  میں کوئی گناہ  نہیں ، بلکہ  ایسا  مخلص شخص   اس  عمل پراجر  و ثواب  کاحقدار ہوگا ۔ان شاء اللہ تعالی ۔

حوالہ جات

الدر المنثور في التفسير بالمأثور (8/ 86)
لَا تَجِدُ قَوْمًا يُؤْمِنُونَ بِاللَّهِ وَالْيَوْمِ الْآخِرِ يُوَادُّونَ مَنْ حَادَّ اللَّهَ وَرَسُولَهُ وَلَوْ كَانُوا آبَاءَهُمْ أَوْ أَبْنَاءَهُمْ أَوْ إِخْوَانَهُمْ أَوْ عَشِيرَتَهُمْ أُولَئِكَ كَتَبَ فِي قُلُوبِهِمُ الْإِيمَانَ وَأَيَّدَهُمْ بِرُوحٍ مِنْهُ وَيُدْخِلُهُمْ جَنَّاتٍ تَجْرِي مِنْ تَحْتِهَا الْأَنْهَارُ خَالِدِينَ فِيهَا رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُمْ وَرَضُوا عَنْهُ أُولَئِكَ حِزْبُ اللَّهِ أَلَا إِنَّ حِزْبَ اللَّهِ هُمُ الْمُفْلِحُونَ (22)
الدر المنثور في التفسير بالمأثور (8/ 87)
وَأخرج أَبُو نعيم فِي الْحِلْية عَن ابْن مَسْعُود رَضِي الله عَنهُ قَالَ: قَالَ رَسُول الله صلى الله عَلَيْهِ وَسلم: أوحى الله إِلَى نَبِي من الْأَنْبِيَاء أَن قل لفُلَان العابد أما زهدك فِي الدُّنْيَا فتعجلت رَاحَة نَفسك وَأما انقطاعك إليّ فتعززت بِي فَمَاذَا عملت فِي مَالِي عَلَيْك قَالَ يَا رب: وَمَالك عليّ قَالَ: هَل واليت لي وليا أَو عاديت لي عدوا
 
 
الدر المنثور في التفسير بالمأثور (8/ 87)
وَأخرج الطَّيَالِسِيّ وَابْن أبي شيبَة عَن الْبَراء بن عَازِب قَالَ: قَالَ رَسُول الله صلى الله عَلَيْهِ وَسلم أوثق عرى الإِيمان الْحبّ فِي الله والبغض فِي الله

احسان اللہ شائق عفا اللہ عنہ    

       دارالافتاء جامعة الرشید    کراچی

١۹ جمادی  الثانیہ  ١۴۴۳ھ

n

مجیب

احسان اللہ شائق صاحب

مفتیان

آفتاب احمد صاحب / محمد حسین خلیل خیل صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔