021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
مرکزی رؤیت ہلال کمیٹی کی شرعی حیثیت ؟
59021حکومت امارت اور سیاستدارالاسلام اور دار الحرب اور ذمی کے احکام و مسائل

سوال

خیبرپختون خوا میں رمضان اورشوال کےچاندکے متعلق مرکزی ہلال کمیٹی اورلوکل کمیٹی کے مابین اختلاف جوعرصہ درازسے چلاآرہاہےوہ آپ سے ڈھکاچھپانہیں ہوگاتوایسی صورت میں لوکل کمیٹی کے اعلان پرعمل کیاجائے یامرکزی ہلال کمیٹی کے اعلان پرعمل کیاجائے؟

o

ریاست کی طرف سے نامزدہ رؤیت ہلال کمیٹی کی حیثیت قاضی کی ہے،شرعی طورپرچاندکی رؤیت کے اعلان کی ولایت اسی کمیٹی کوحاصل ہے،اس کمیٹی کے ہوتےہوئےغیرسرکاری کمیٹیوں کی شرعی طورپرکوئی حیثیت نہیں،لہذامرکزی رؤیت ہلال کمیٹی کے فیصلہ کے مطابق عمل کرناپاکستان كے تمام لوگوں کی ذمہ داری ہے ،اس کے خلاف عمل کرناجائزنہیں ۔

حوالہ جات

صحيح البخاري (ج 3 / ص 1080): عن ابن عمر رضي الله عنهما : عن النبي صلى الله عليه و سلم قال ( السمع والطاعة حق ما لم يؤمر بالمعصية فإذا أمر بمعصية فلا سمع ولا طاعة ) رد المحتار (ج 21 / ص 479): "( قوله : أمر السلطان إنما ينفذ ) أي يتبع ولا تجوز مخالفته وسيأتي قبيل الشهادات عند قوله أمرك قاض بقطع أو رجم إلخ التعليل بوجوب طاعة ولي الأمر وفي ط عن الحموي أن صاحب البحر ذكر ناقلا عن أئمتنا أن طاعة الإمام في غير معصية واجبة فلو أمر بصوم وجب ا هـ وقدمنا أن السلطان لو حكم بين الخصمين ينفذ في الأصح وبه يفتى ."
..

n

مجیب

محمد اویس صاحب

مفتیان

سیّد عابد شاہ صاحب / سعید احمد حسن صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔