021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
حاملہ کی عدت کتنی ہے؟
..نکاح کا بیاننسب کے ثبوت کا بیان

سوال

حاملہ کی عدت کتنی ہے؟اگر وہ کہے کہ میں بیوی کو اپنے گھر میں رکھوں گا،لیکن بات چیت نہ کروں گا تو کیا یہ جائز ہے؟

o

حاملہ کی عدت بچے کی پیدائش تک ہوتی ہے،چونکہ مذکورہ صورت میں اس شخص کا اپنی سالی سے نکاح صحیح نہیں ہوا،اس لیے اس کے ذمے لازم ہے کہ فوری طور پر اس سے علیحدگی اختیار کرلے،اسے ساتھ رکھنا جائز نہیں۔ تاہم اگر یہ شخص اس عورت)سالی(کو چھوڑنا نہیں چاہتا تو اپنی سابقہ بیوی کی عدت ختم ہونے کے بعد اس)سالی( سے دوبارہ نکاح کرکےاسے اپنے ساتھ رکھ سکتا ہے،اس کے بغیر نہیں۔ نیز مذکورہ صورت میں چونکہ اس عورت )سالی(کو حمل ٹہرنے کا بھی امکان ہے،اس لیےبھی بہتر یہی ہے کہ سابقہ بیوی کی عدت ختم ہونے کے بعد دوبارہ نکاح کرلیا جائے۔

حوالہ جات

"الفتاوى الهندية" (1/ 528): "وعدة الحامل أن تضع حملها كذا في الكافي. سواء كانت حاملا وقت وجوب العدة أو حبلت بعد الوجوب كذا في فتاوى قاضي خان. وسواء كانت المرأة حرة أو مملوكة قنة أو مدبرة أو مكاتبة أو أم ولد أو مستسعاة مسلمة أو كتابية كذا في البدائع. وسواء كانت عن طلاق أو وفاة أو متاركة أو وطء بشبهة كذا في النهر الفائق".
..

n

مجیب

محمد طارق صاحب

مفتیان

آفتاب احمد صاحب / سعید احمد حسن صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔