021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
تعویذپراجرت لینے کاحکم
..جائز و ناجائزامور کا بیانخریدو فروخت اور کمائی کے متفرق مسائل

سوال

شرطیہ تعویذ سے حاصل ہونے والی رقم کااستعمال درست ہے یانہیں؟

o

اگرتعویذجائزکام کے لئے دیاجائے اورتعویذمیں لکھی ہوئی عبارت شرکیہ نہ ہوتواس پراجرت لیناجائزہے،اوراگرناجائزکام کے لئے دیاجائے یااس کی عبارت شرکیہ الفاظ پرمشتمل ہوتواس صورت میں یہ اجرت حلال نہیں ،کیونکہ گناہ کے کام کی اجرت لیناجائزنہیں۔

حوالہ جات

رد المحتار (ج 24 / ص 297): "لأن المتقدمين المانعين الاستئجار مطلقا جوزوا الرقية بالأجرة ولو بالقرآن كما ذكره الطحاوي ؛ لأنها ليست عبادة محضة بل من التداوي ." الدر المختار للحصفكي (ج 6 / ص 339): "(لا تصح الاجارة لعسب التيس) وهو نزوه على الاناث (و) لا (لاجل المعاصي مثل الغناء والنوح والملاهي)"
..

n

مجیب

محمد اویس صاحب

مفتیان

سیّد عابد شاہ صاحب / سعید احمد حسن صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔