021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
چھوٹے سائز کا قرآن مجید جیب میں رکھنا
62207قرآن کریم کی تفسیر اور قرآن سے متعلق مسائل کا بیانمتفرّق مسائل

سوال

کیا فرماتے ہیں علماءکرام اس مسئلہ کے بارے میں کہ چھوٹے سائز کا قرآن مجید جیب میں رکھنا صحیح ہے؟

o

چھوٹے سائز کا قرآن مجید جیب میں رکھنا جائز ہے،البتہ جیب میں رکھ کر بیت الخلاء جانا بےادبی اور مکروہ ہے،لہذاایسی ضرورت کے وقت اسے کسی مناسب جگہ پر رکھ کر ضرورت پوری کرنی چاہیے۔نیز اگر یہ قرآن غلاف سے جدا ہو کر رکھا ہے تو اسے جیب میں رکھتے ہوئے وضوء لازمی نہ ہوگا۔لیکن اگر وہ غلاف میں سلاہوا ہو یا اس کا سرورق اس میں اٹکایا جاتا ہو تو اس صورت میں وضوء کی حالت میں ہی رکھنا درست ہوگا۔

حوالہ جات

فی الفتاوی الہندیہ:" سئل الفقيه أبو جعفر رحمه الله تعالى عمن كان في كمه كتاب ،فجلس للبول: أيكره ذلك؟ قال: إن كان أدخله مع نفسه المخرج ،يكره...وعلى هذا إذا كان في جيبه دراهم مكتوب فيها اسم الله تعالى، أو شيء من القرآن، فأدخلها مع نفسه المخرج ،يكره." (الفتاوی الہندیۃ:5/323،دار الفکر)
..

n

مجیب

متخصص

مفتیان

ابولبابہ شاہ منصور صاحب / فیصل احمد صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔