021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
بچہ میں والدین کی صفات کامنتقل ہونا
..علم کا بیانعلم کے متفرق مسائل کابیان

سوال

سوال:سناہے کہ بچہ میں والدین کے خون کااثرآتاہے،یہ بات کہاں تک درست ہے،کیونکہ ایدہی سینٹرسے جوبچہ ملتاہے ان کے والدین کاپتہ نہیں ہوتا،دوسرایہ کہ بچے میں اس کاکیاقصورہے؟

o

بچہ میں والدین کے خون کے اثرات کے منتقل ہونے سے مراد اگروالدین کی صفات کامنتقل ہوناہے تو یہ ضروری نہیں،جس کامشاہدہ عملی زندگی میں دیکھاجاسکتاہے،اگراس سے مرادآپ کی یہ ہے ناجائزعمل کے ذریعہ پیداہونے والے بچہ کواس کی سزا(بچے کوسینٹرز میں جمع کرانا)كیوں دی جاتی ہے،اس كاتواس میں كوئی قصورنہیں،یہ بات آپ کی صحیح ہے اوریہی اللہ کاحکم ہےکہ کسی ایک کے گناہ کی سزادوسرے کونہیں دی جاسکتی،اسی وجہ سے اسلام نے اس قسم کے بچوں کی تربیت اوران کے حقوق کی ادائیگی کاحکم دیاہے۔

حوالہ جات

,
..

n

مجیب

محمد اویس صاحب

مفتیان

آفتاب احمد صاحب / سیّد عابد شاہ صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔