021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
دودھ پیتے بچے کی قے کا حکم
72919پاکی کے مسائلنجاستوں اور ان سے پاکی کا بیان

سوال

السلام علیکم ورحمۃ اللہ و برکاتہ!

کیا دودھ پیتے بچے کی الٹی پاک ہوتی ہے یا ناپاک؟

o

دودھ پیتے بچے کی اُلٹی اگر اُس نے منہ بھر کر کی ہو تو وہ ناپاک ہوتی ہے۔

حوالہ جات

قال العلامۃ الحصکفي رحمہ اللہ تعالی: وأما العلق النازل من الرأس، فغير ناقض (أو طعام أو ماء) إذا وصل إلى معدته، وإن لم يستقر، وهو نجس مغلظ، ولو من صبي ساعة ارتضاعه. هو الصحيح لمخالطة النجاسة. ذكره الحلبي. (الدر المختار مع رد المحتار: 1/137)
قال العلامۃ ابن عابدین رحمہ اللہ تعالی: وفي الفتح: صبي ارتضع، ثم قاء، فأصاب ثياب الأم إن كان ملء الفم فنجس، فإذا زاد على قدر الدرهم منع. (رد المحتار: 1/309)

صفی ارشد

دارالافتاء، جامعۃ الرشید، کراچی

6/ شعبان/ 1442

n

مجیب

صفی ارشد ولد ارشد ممتاز فاروقی

مفتیان

فیصل احمد صاحب / شہبازعلی صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔