021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
سیب ودیگرچیزوں میں زکوۃ وعشر کاحکم
74900زکوة کابیانعشر اور خراج کے احکام

سوال

سوال:السلام علیکم  کیافرماتےہیں علماء کرام اس مسئلہ کےبارےمیں

مسئلہ:سیب،زردآلو،آلو،پیاز،بادام،تم،چری وغیرہ میں زکوۃ کس بکری سےاداء کیاجائےگا،کچہ یاپکہ بکری سے،پکہ بکری میں تخم،بیل،کریٹ،شالی میغ،مزدورکمیشن،آنےجانےکاکرایہ،ٹرک کارکاٹ کرباقی جورقم بچےاس کوپکہ بکری کہتےہیں،کچہ بکری میں یہ چیزیں شامل نہیں ہوتی،زکوۃ کس بکری سےاداء کیاجائےگا،صافی سےیاکچہ سے؟

 

o

سوال میں ذکرکردہ اشیاء میں دیگراخراجات کونکالنےسےپہلےعشردیاجائےگا،یعنی جتنی پیداوارہوئی،اس کادسواں حصہ دیاجائےگا،اس سےکرایہ وغیرہ کومنہاء نہ کیاجائے۔

حوالہ جات

 
"الهداية" 1 / 107:
 وكل شيء أخرجته الأرض مما فيه العشر لا يحتسب فيه أجر العمال ونفقة البقر لأن النبي عليه الصلاة و السلام حكم بتفاوت الواجب لتفاوت المؤنة فلا معنى لرفعها۔
"رد المحتار "7 /  167:
( قوله : بلا رفع مؤن ) أي يجب العشر في الأول ونصفه في الثاني بلا رفع أجرة العمال ونفقة البقر وكري الأنهار وأجرة الحافظ ونحو ذلك درر۔
"تبيين الحقائق شرح كنز الدقائق"3 /  445:
 قال رحمه الله ( ولا ترفع المؤن ) أي في كل ما أخرجته الأرض لا تحتسب أجرة العمال ونفقة البقر وكري الأنهار وأجرة الحافظ وغير ذلك ۔

محمدبن عبدالرحیم

دارالافتاءجامعۃالرشیدکراچی

06/جمادی الاولی  1443 ھج

n

مجیب

محمّد بن حضرت استاذ صاحب

مفتیان

سیّد عابد شاہ صاحب / سعید احمد حسن صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔