021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
معتکف کے لیےاعتکاف میں جائز دنیوی کام
76846روزے کا بیاناعتکاف کا بیان

سوال

مسجدمیں معتكف شخص حالتِ اعتكاف میں كون كون سے دنیاوی كام كر سكتا ہے؟

o

معتکف وہ تمام جائز دنیوی کام حالت اعتکاف میں کرسکتا ہے جن سے مسجد کا احترام متاثر نہ ہو، مثلا:مسجد میں لیٹنا ، کھانا پینا، ،لباس تبدیل کرنا،تیل لگانا، خوشبو لگانا ، مسجد میں سامان لائے بغیر ضروری خرید وفروخت کرنا، اپنی یا دوسرے کی حجامت بنانا، بشرطیکہ بالعوض نہ ہواور صفائی کا اہتمام ہو،مریض کا حال سن کر دوا بتانا یا نسخہ لکھ کر دینا،تعلیم وتدریس،وغیرہ وغیرہ۔

حوالہ جات

الفتاوى الهندية (1/ 213)
ولا بأس للمعتكف أن يبيع ويشتري الطعام، وما لا بد منه، وأما إذا أراد أن يتخذ متجرا فيكره له ذلك هكذا في فتاوى قاضي خان والذخيرة وهو الصحيح هكذا في التبيين ويجوز للمعتكف أن يتزوج ويراجع كذا في الجوهرة النيرة ويلبس المعتكف ويتطيب ويدهن رأسه كذا في الخلاصة.

نواب الدین

دار الافتاء جامعۃ الرشید کراچی

 ۱۹ شوال ۱۴۴۳ھ

n

مجیب

نواب الدین صاحب

مفتیان

سیّد عابد شاہ صاحب / محمد حسین خلیل خیل صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔