021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
دل میں آیت سجدہ پڑھنا
55884.6نماز کا بیانسجدہ تلاوت کا بیان

سوال

جس طرح قرآن مجید کھول کراورقرآن مجید میں دیکھ کرآیت سجدہ پڑھنے سے سجدہ تلاوت واجب ہوتاہے ،بالکل اسی طرح قرآن مجید کھول کراورقرآن مجید میں دیکھ کرسجدہ دل ودھیان میں تلاوت کرنے سے بھی سجدہ تلاوت واجب ہوجاتاہے جبکہ دونوں صورتوں میں فرق صرف اتناہے کہ ایک صورت میں زبان سے آیت سجدہ تلاوت کی ہے اوردوسری میں دل ودھیان میں آیت سجدہ تلاوت کی ہے ۔برائے مہربانی راہنمائی فرمائیں ۔ o

o

آیت سجدہ کودل میں تلاوت کرنے سےسجدہ تلاوت واجب نہیں ہوتا،اس کے لئے زبان سے الفاظ اداکرناضروری ہے تقریبا تمام امور دین ودنیا کے احکام الفاظ سے متعلق ہیں ،دل کے دھیان سے نہیں ۔

حوالہ جات

" رد المحتار" 5 / 429: باب سجود التلاوة من إضافة الحكم إلى سببه ( يجب ) بسبب ( تلاوة آية ) أي أكثرها مع حرف السجدة۔۔۔ ( بشرط سماعها ) فالسبب التلاوة وإن لم يوجد السماع ، كتلاوة الأصم والسماع شرط في حق غير التالي ولو بالفارسية إذا أخبر ( أو ) بشرط ( الائتمام ) أي الاقتداء ( بمن تلاها ) فإنه سبب لوجوبها أيضا ، إن لم يسمعها ولم يحضرها للمتابعة۔ " رد المحتار" 5 /430،432 : ( قوله بسبب تلاوة ) احترز عما لو كتبها أو تهجاها فلا سجود عليه كما سيأتي۔۔۔و قوله بشرط سماعها ) فلا تجب على من لم يسمعها وإن كان في مجلس التلاوة شرح المنية۔
..

n

مجیب

محمّد بن حضرت استاذ صاحب

مفتیان

سیّد عابد شاہ صاحب / سعید احمد حسن صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔