021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
سوتیلی اولاد کے آپس میں نکاح کاحکم
..نکاح کا بیاننکاح کے منعقد ہونے اور نہ ہونے کی صورتیں

سوال

میری دوسری شادی ہوئی پہلے شوہر سے میری ایک بیٹی ہے ،جس شخص سے شادی ہوئی ہے اس کا پہلی بیوی سے ایک لڑکا ہے لڑکی لڑکا دونوں بالغ ہیں ،اب سوال یہ ہے کیا مذکورہ لڑکا لڑکی کے آپس میں نکاح ہوسکتا ہے ؟ شرعا اس میں کوئی قباحت تو نہیں قرآن وحدیث کی روشنی جواب مطلوب ہے جزاک اللہ خیرا۔

o

ان دونوں میں کوئی حقیقی رشتہ حرمت قائم نہیں ہے اس لئےان دونوں کا آپس میں نکاح جائز ہے ۔

حوالہ جات

{وَأُحِلَّ لَكُمْ مَا وَرَاءَ ذَلِكُمْ أَنْ تَبْتَغُوا بِأَمْوَالِكُمْ مُحْصِنِينَ غَيْرَ مُسَافِحِينَ فَمَا اسْتَمْتَعْتُمْ بِهِ مِنْهُنَّ فَآتُوهُنَّ أُجُورَهُنَّ فَرِيضَةً وَلَا جُنَاحَ عَلَيْكُمْ فِيمَا تَرَاضَيْتُمْ بِهِ مِنْ بَعْدِ الْفَرِيضَةِ إِنَّ اللَّهَ كَانَ عَلِيمًا حَكِيمًا (24} [النساء: 24] {فَانْكِحُوا مَا طَابَ لَكُمْ مِنَ النِّسَاءِ مَثْنَى وَثُلَاثَ وَرُبَاعَ فَإِنْ خِفْتُمْ أَلَّا تَعْدِلُوا فَوَاحِدَةً أَوْ مَا مَلَكَتْ أَيْمَانُكُمْ ذَلِكَ أَدْنَى أَلَّا تَعُولُوا (3) } [النساء: 3، 4]
..

n

مجیب

احسان اللہ شائق صاحب

مفتیان

آفتاب احمد صاحب / سیّد عابد شاہ صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔