021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
﴾میراث کی تقسیم﴿ دو بھائیوں اور دو بہنوں کے مابین
63768 میراث کے مسائلمیراث کے متفرق مسائل

سوال

ہم چار بہن بھائی ہیں، دو بھائی اور دو بہنیں۔ ہمارے والد صاحب مرحوم کے ترکے میں ایک عدد گاڑی تھی جو کہ انتقال کے بعد سے میرے استعمال میں تھی۔ اب اس کو فروخت کرنے پر مبلغ 65000 (پینسٹھ ہزار روپے) ملے ہیں۔ اب پوچھنا یہ ہےکہ اس رقم کو چاروں بہن بھائی میں تقسیم کا کیا طریقہ ہوگا، ہر ایک کے حصے میں کتنی رقم آئے گی؟

o

مذکورہ صورت میں گاڑی کی قیمت کے چھ حصے کر کے ہر بھائی کو دو دو، اور ہر بہن کو ایک ایک حصہ ملے گا۔ یعنی ہر بھائی کو 21666.66 روپے اور ہر بہن کو 10833.33 روپے ملیں گے۔

حوالہ جات

{يُوصِيكُمُ اللَّهُ فِي أَوْلَادِكُمْ لِلذَّكَرِ مِثْلُ حَظِّ الْأُنْثَيَيْنِ} [النساء: 11] واللہ سبحانہ و تعالی اعلم
..

n

مجیب

متخصص

مفتیان

سیّد عابد شاہ صاحب / سعید احمد حسن صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔