021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
جس جانورکے تھن چھوٹے ہوں اس کی قربانی کاحکم
56542قربانی کا بیانقربانی کے مستحبات اور قربانی کے جانور سے انتفاع کا حکم

سوال

کیافرماتے ہیں علماء دین مسائل ذیل کے بارے میں کہ کسی جانورکے پیدائشی تھن چھوٹے ہوں،تواس جانورکی قربانی جائزہے یانہیں ؟

o

اگرتھن چھوٹے ہونے کی وجہ سے پیدائشی طورپرخشک بھی ہوں توایسے جانورکی قربانی جائزنہیں،اوراگرتھن چھوٹے توہیں لیکن دودھ خشک نہ ہواہوتوقربانی جائزہے۔

حوالہ جات

"الهندية"42 / 294: والشطور لا تجزئ وهي من الشاة ما انقطع اللبن عن إحدى ضرعيها ، ومن الإبل والبقر ما انقطع اللبن من ضرعيهما ؛ لأن لكل واحد منهما أربع أضرع ، كذا في التتارخانية . ومن المشايخ من يذكر لهذا الفصل أصلا ويقول : كل عيب يزيل المنفعة على الكمال أو الجمال على الكمال يمنع الأضحية ، وما لا يكون بهذه الصفة لا يمنع۔
..

n

مجیب

محمّد بن حضرت استاذ صاحب

مفتیان

فیصل احمد صاحب / محمد حسین خلیل خیل صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔