021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
کرسی پر بیٹھےنمازی کے سامنے گزرنا
..نماز کا بیاننماز کےمتفرق مسائل

سوال

معذور آدمی جس کرسی پر نماز ادا کرتا ہے،اس کی اونچائی تقریباً ایک میٹر سے زیادہ ہوتی ہے۔تو کیا اس نمازی کے سامنے گزرنا جائز ہے ؟؟

o

شرعی سترہ وہ ہوتا ہے جونمازی کے سامنے کم سے کم ڈیڑھ فٹ اونچا اور ایک انگلی کے برابر موٹا ہو اب چونکہ کرسی کے آگے لگا ہوا تختہ اتنا اونچا نہیں ہوتا، لہٰذا ایسی کرسی پر بیٹھ کر نماز پڑھنے والے کے آگے سے بغیر کسی سترہ کے گزرنا درست نہیں۔

حوالہ جات

الدرالمختار (1 / 636) "( ويغرز ) ندبابدائع ( الإمام ) وكذا المنفرد ( في الصحراء ) ونحوها ( سترة بقدر ذراع ) طولا ( وغلظ أصبع ) لتبدو للناظر ( بقربه ) دون ثلاثة أذرع ( على ) حذاء ( أحد حاجبيه ) لا بين عينيه والأيمن أفضل" الفتاوى الهندية[ 1 / 104] "وينبغي لمن يصلي في الصحراء أن يتخذ أمامه سترة طولها ذراع وغلظها غلظ الأصبع ويقرب من السترة ويجعلها على حاجبه الأيمن أو الأيسر والأيمن أفضل هكذا في التبيين وإن تعذر غرز العود لا يلقي كذا في الكافي"
..

n

مجیب

متخصص

مفتیان

سیّد عابد شاہ صاحب / محمد حسین خلیل خیل صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔