021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
جمعہ کے خطبہ کا انگریزی میں ترجمہ کرنے کا حکم
67831نماز کا بیانجمعہ و عیدین کے مسائل

سوال

 میں ایک کمپنی کا منیجر ہوں اور کثرت سے یورپ جاتا ہوں،وہاں جمعہ وغیرہ پڑھتاہوں،لیکن وہاں خطبہ کی ترتیب کچھ اس طرح ہوتی ہےکہ عربی خطبہ امام صاحب دیتا ہے۔اورپھر اس کا انگریزی میں ترجمہ ہوتا ہے۔ایسے ہی دوسرا خطبہ عربی میں ہوتا ہے،پھر اس کا ترجمہ کرتے ہیں،اس کے بعد جماعت کھڑی ہوجاتی ہے،

کیا اس طرح خطبہ دینا ٹھیک ہے؟اور نماز ہو جاتی ہے؟

o

خطبہ کے دوران خطبہ کا ترجمہ کرنا خلاف سنت ہے،بہتر یہ ہے کہ خطبہ سے پہلے الگ سے ترجمہ بیان کردیاجائے،اس حوالے سے ماننے کی امید ہو تو امام صاحب کو توجہ دلانی چاہیے،اسی طرح خطبے سے پہلے بیان یاترجمہ اورنمازکے بعد وعظ یا اپنی سوال وجواب کی محفل میں بھی حرج نہیں،ان میں سےکوئی صورت اختیار کرنی چاہیے،نماز بہرحال ہوجاتی ہے،لہذاجماعت نہ چھوڑیں۔

حوالہ جات

روی الإمام الترمذي رحمه اللہ تعالي:عن نافع عن ابن عمر رضي اللہ عنھما :أن النبي صلي اللہ عليه وسلم كان يخطب يوم الجمعة،ثم يجلس ،ثم يقوم،فيخطب قال:مثل ما يفعلون اليوم.(1/113) قال العلامۃ السرخسی رحمہ اللہ تعالی:(قال): ولا ينبغي للإمام أن يتكلم في خطبته بشيء من حديث الناس ؛لأنه ذكر منظوم ،والتكلم في خلاله يذهب بهاءه فلا يشتغل به كما في خلال الأذان. (المبسوط السرخسی:2/27) قال الإمام الدھلوي رحمه اللہ تعالى:ولما لاحظناخطب النبي صلي اللہ عليه وسلم ،وخلفائه رضي اللہ عنھم ،وھلم جرا،فتنقحنا وجود اشياء،منھا:الحمد،والشھادتين،والصلوة علي النبي، والأمر بالتقوى ، و تلاوةآیۃ ، و الدعاء للمسلمین و المسلمات ، و کون الخطبۃ عربیۃ (الی قولہ) : و أما كونھا عربية ، فلا ستمرار أھل المسلمين في المشارق والمغارب به مع أن في كثير من الأقاليم كان المخاطبون أعجمين. وقال النووي في كتاب الأذكار:حمد اللہ تعالى يشترط كونھا (أي خطبة الجمعة وغيرھا)بالعربية. (المسوي :1/256) وفی عمدۃ الرعایۃ:لاشک فی أن الخطبة بغير العربية خلاف السنة المتوارثة من النبي صلي اللہ عليه وسلم والصحابة ،فيكون مکروھا تحریما.(1/242) قال العلامۃ الحصکفی رحمہ اللہ تعالی:ويكره تكلمه فيها إلا لأمر بمعروف ؛لأنه منها. (الدر المختار:2/149) ھكذافي فتاوي محموديه للشيخ محمود الحسن الكنكوھي رحمه اللہ تعالي. (فتاوي محموديه:2/ 295) وفي امداد الفتاوی للشيخ اشرف علي التھانوي رحمه اللہ تعالي.(امداد الفتاوي:1/642) وفي احسن الفتاوی للشيخ رشيد احمد رحمه اللہ تعالي.(احسن الفتاوي:4/164)
..

n

مجیب

متخصص

مفتیان

ابولبابہ شاہ منصور صاحب / فیصل احمد صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔