021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
حجاب کے باوجود زیب وزینت کی چیزوں کا نظر آنا
75033جائز و ناجائزامور کا بیانپردے کے احکام

سوال

عورت کا پورا ستر چھپا ہو،مگر کوئی پہننے کی چیز جیسے بریسلیٹ، چوڑیاں، گھڑی یا پایل دکھ رہا ہو توکیا یہ جائز ہے؟

o

حکم حجاب کا مقصد دوسروں کے توجہ اور میلان سے بچاؤ اور حفاظت ہے،اور زیورات وغیرہ کے دکھنے میں اصل حکم متاثر ہوتا ہے، اس وجہ سے ان کا دکھانا یا کھلنے سے احتیاط نہ کرناجائز نہیں، البتہ باوجود احتیاط کے اگر کبھی غیر اختیاری طور پر کوئی چیز کھل کرنظرآ جائے تو کوئی گناہ نہیں۔

حوالہ جات

تفسير الألوسي = روح المعاني (9/ 340)
ثم اعلم أن عندي مما يلحق بالزينة المنهي عن إبدائها ما يلبسه أكثر مترفات النساء في زماننا فوق ثيابهن ويتسترن به إذا خرجن من بيوتهن وهو غطاء منسوج من حرير ذي عدة ألوان وفيه من النقوش الذهبية أو الفضية ما يبهر العيون، وأرى أن تمكين أزواجهن ونحوهم لهن من الخروج بذلك ومشيهن به بين الأجانب من قلة الغيرة وقد عمت البلوى بذلك، ومثله ما عمت به البلوى أيضا من عدم احتجاب أكثر النساء من إخوان بعولتهن وعدم مبالاة بعولتهن بذلك وكثيرا ما يأمرونهن به.

نواب الدین

دار الافتاء جامعۃ الرشید کراچی

۲۲جمادی الاول۱۴۴۳ھ

n

مجیب

نواب الدین صاحب

مفتیان

آفتاب احمد صاحب / محمد حسین خلیل خیل صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔