021-36880325,0321-2560445

5

ask@almuftionline.com
AlmuftiName
فَسْئَلُوْٓا اَہْلَ الذِّکْرِ اِنْ کُنْتُمْ لاَ تَعْلَمُوْنَ
ALmufti12
قرآن کریم کی آیات کو لکھ کر جانوروں کوکھلانا
77412ذکر،دعاء اور تعویذات کے مسائلرسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم پر درود وسلام بھیجنے کے مسائل ) درود سلام کے (

سوال

آج کل جانوروں (گائے) میں ایک مخصوص قسم کی بیماری پھیلی ہوئی ہے جسم پر دانے نکل آتے ہیں تو اس کے علاج و معالجہ کے لیے قرآن کریم کی مخصوص آیات کو کسی کاغذ پر لکھ کر جانوروں کو کھلاتے ہیں۔ تو اس کےبارے میں مفتیان کرام کیا فرماتے ہیں کہ  کیایہ امر جائز ہے یا نہیں ؟

o

ازالہ امراض کے لیےقرآنی آیات لکھ کر پلانابعض آثار سے ثابت ہے ،لہذا یہ بھی جائز ہے۔

حوالہ جات

مصنف ابن أبي شيبة (5/ 39)
في الرخصة في القرآن يكتب لمن يسقاه
حدثنا علي بن مسهر، عن ابن أبي ليلى، عن الحكم، عن سعيد بن جبير، عن ابن عباس، قال: إذا عسر على المرأة ولدها، فيكتب هاتين الآيتين والكلمات في صحفة ثم تغسل فتسقى منها: «بسم الله لا إله إلا هو الحليم الكريم، سبحان الله رب السموات السبع ورب العرش العظيم» {كأنهم يوم يرونها لم يلبثوا إلا عشية أو ضحاها} [النازعات: 46] {كأنهم يوم يرون ما يوعدون لم يلبثوا إلا ساعة من نهار، بلاغ فهل يهلك إلا القوم الفاسقون} [الأحقاف: 35]۔۔۔۔۔
۔۔۔۔حدثنا أبو بكر قال: حدثنا هشيم، عن خالد، عن أبي قلابة، وليث، عن مجاهد: «أنهما لم يريا بأسا أن يكتب آية من القرآن ثم يسقاه صاحب الفزع»

نواب الدین

دار الافتاء جامعۃ الرشید کراچی

 یکم محرم۱۴۴۴ھ

n

مجیب

نواب الدین صاحب

مفتیان

سیّد عابد شاہ صاحب / سعید احمد حسن صاحب

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔